ہمارے کام کے موضوعات
جسم پر حق
آواز
(ماحول (قدرتی اور سیاسی
تنظیمی ارتقاء

جسم پر حق
(Strategic Objectives)حکمت عملی
عورتوں میں جنسی اور تولیدی صحت اور حقوق، عورتوں کے خلاف تشدد، عورت اور قانون اور سازگار ماحول کے حوالے سے ان کی معلومات میں اضافہ کرنا اور ایک ’’تصور‘‘ کے طور پر ان کی سمجھ بوجھ کو اس ضمن میں بڑھاوا دینا۔

(Strategic Directions)حکمت عملی کا رخ
عورتوں کو اس قابل بنانا کہ وہ اپنے جسم پر اختیار اور حق کی اہمیت کو سمجھ سکیں اور ایسی تمام رائج روایتوں کو رد کر سکیں جو ان حقوق کے حصول کی راہ میں آڑے آتی ہیں۔
ہم یہ سمجھتے ہیں کہ خواتین کے اردگرد کا ماحول ایسا ہونا چاہیے جہاں وہ اپنے جسم پر اپنے اختیار کو یقینی بنا سکیں۔ اس کے لیے ضروری ہے کہ اس کی کمیونٹی، مقامی حکومتی اہلکاروں، سہولیات فراہم کرنے والے سرکاری اہلکاروں اور مجموعی طور پر پورے سماج میں اس طرح کی آگاہی کو پھلایا جائے۔
ہمارے کام سے اب سرکاری اہلکاروں میں اس حوالے سے کافی احساس ذمہ داری اور حساسیت پیدا ہوئی ہے اور مقامی تنظیموں اور لوکل گورنمنٹ باڈیز کے درمیان کافی ہم آہنگی اور مؤثر تعلقات استوار ہو رہے ہیں۔
شرکت گاہ کے طور پر ہم اس بات پر یقین رکھتے ہیں کہ یہ ریاست کی ذمہ داری ہے کہ وہ ایسے قوانین اور پالیسیاں بنائے اور ان پر مؤثر طریقے سے عملدرآمد کو یقینی بنائے تاکہ عورتیں بغیر کسی خوف کے اپنے جسمانی حقوق کا مطالبہ کر سکیں۔
سماج میں بڑی سطح پر ہم آہنگی پیدا کرنے کیلئے شرکت گاہ اپنے مختلف پروگراموں میں مردوں اور نوجوانوں کو شامل کرتی ہے تاکہ عورتوں کے جسمانی حقوق کے حوالے سے ایک سازگار ماحول تشکیل دیا جا سکے جوکہ عورتوں کے اس حق کو باخوشی قبول کرے۔

آواز
(Strategic Objectives)حکمت عملی
عورتوں کو پدرسری اور دوسرے رکاوٹی عناصر کے خلاف اپنی انفرادی اور اجتماعی آوازوں کو بلند کرنے کیلئے مضبوط کرنا تاکہ وہ مقامی سے صوبائی اور ملکی سے عالمی سطح تک اپنے جمہوری حق اور سماجی انصاف کا مطالبہ کر سکیں۔

(Strategic Directions)حکمت عملی کا رخ
عورتوں کو انفرادی اور اجتماعی سطح پر ایک ایجنسی کے طور پر اپنے جمہوری حقوق اور سماجی انصاف کے مطالبے کے قابل بنانا۔ عورتوں کو ایک ایجنسی کے طور پر متحرک کرنے کیلئے ’’آواز‘‘ کا ہونا ضروری ہے تاکہ وہ اپنے جمہوری حقوق اور سماجی انصاف کے مطالبے کو واضح طور پر پیش کر سکیں۔ صرف اظہار کی آزادی ہی آزادی نہیں ہے بلکہ سوچ اور شعور کا رکھنا اور اس کا اظہار بھی ایک حق ہے۔ ’’آواز‘‘ تمام طرح کے حقوق کے حصول میں معاون بنتی ہے۔ خاص طور پر پرخطر اور دھمکی آمیز ماحول میں اس کا ہونا اور بھی اہم ہے۔
شرکت گاہ نچلی سطح پر جاکر ان عورتوں کو منتخب کرتی ہے، ان کی آبیاری کرتی ہے، ان کی صلاحیتوں کو اُبھارتی ہے اور پاکستان سے لے کر خطے اور بین الاقوامی سطح تک اپنے حقوق کے مطالبے کیلئے اُٹھائی جانے والی ان کی آوازوں میں ان کی مدد کرتی ہے۔

( ماحول (قدرتی اور سیاسی
حکمت عملی(Strategic Objectives)
خواتین کی بااختیاری، امن اور سماجی انصاف کیلئے ایک ایسے سازگار سماجی، ثقافتی، سیاسی، معاشی اور قدرتی ماحول کا فروغ۔

حکمت عملی کا رخ(Strategic Directions)
ثقافتی طور پر پرامن، جمہوری، تکثیری اور ترقی کی طرف گامزن سماج ہی انسانی حقوق اور خواتین کی بااختیاری کو یقینی بناتا ہے اور ان اقدار کی اہمیت کو سمجھتا ہے۔
عورتوں کو اپنے حقوق پر عملدرآمد کیلئے ایک قابل عمل پالیسی فریم ورک اور سماجی ماحول کی اشد ضرورت ہوتی ہے اور یہ ریاست کی ذمہ داری ہے کہ وہ ایسے ماحول کو یقینی بنائے جہاں عورتیں اپنے حقوق کو مکمل طور پر حاصل کر سکیں۔
شرکت گاہ پسماندہ اور پچھڑے ہوئے طبقوں کے ساتھ اپنے کام کی روشنی میں ریاست کو ایک ایسے مستحکم سیاسی ماحول کیلئے جواب دہ ٹھہراتی ہے۔ اور مختلف ریسرچز نے بھی یہ ثابت کیا ہے کہ خواتین ماحولیاتی تبدیلیوں اور تباہیوں سے سب سے زیادہ متاثر ہوتی ہیں، چاہے وہ پانی کی کمیابی ہو یا خوراک کی کمی۔ہم پورے پاکستان میں ہم عورتوں کے ساتھ کام کرتے ہیں اور ان میں یہ آگاہی اور احساس پیدا کرنے کی کوشش کرتے ہیں کہ قدرتی ماحول بھی ایک حق ہے اور اس کا بھی پرچار کرتے ہیں کہ قدرتی وسائل کو دیرپا بنیادوں پر کس طرح بہتر طریقے سے استعمال کیا جا سکتا ہے۔

 تنظیمی ارتقاء
(Strategic Objectives)حکمت عملی
مرکزی دھارے میں شامل ایک سرگرم تانثیتی (Feminist) تنظیم جہاں عملے میں سیکھنے اور سمجھنے کا رواج عام ہو جسے مناسب سٹرکچرز، سسٹمز اور پروسیچرز کی مدد بھی حاصل ہو۔

(Strategic Directions)حکمت عملی کا رخ
متحرک، شمولیت پر یقین رکھنے والی تانثیتی (Feminist) تنظیم وہ ہوتی ہے جہاں سیکھنے کو اہمیت دی جاتی ہے اور سماجی انصاف اور سیکولرزم کا پرچار کیا جاتا ہے۔

مؤثر پروگرام کیلئے ضروری ہے کہ تنظیم کی بنیادیں مضبوط ہوں۔ سماج میں بدلتے ہوئے سماجی اور سیاسی معیارات اور رویوں کو مدنظر رکھتے ہوئے ہم نے اپنی تنظیم میں ایک نئے سمجھنے اور سوچنے کے کلچر کو پروان چڑھایا ہے۔ اور ایک منظم طریقے سے اپنی ٹیم کے ممبران میں نالج/معلومات کو منتقل کیا ہے اور اس معلومات کے بہتر استعمال کیلئے ان کی صلاحیتیوں کو مختلف تربیتی پروگراموں کے ذریعے اُبھارا ہے۔